One Response to “Expressing through Shairi”

  1. M.Ramzan Says:

    toot ker zara dekho
    tum agar bikhar jao
    bebasi main ghir jao
    dil se ik sada dena
    bus mujhe bula lena
    main tumhein sanbhal loon ga
    zindagi main chalne ka
    rasta badalne ka
    ik hunar sikha don ga
    or jub tum sanbhal jao
    roshni main dhul jao
    mujh ko yun sila dena
    tum mujhe bhula dena
    tum mujhe bhula dena

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Google photo

آپ اپنے Google اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ /  تبدیل کریں )

Connecting to %s